خواتین میں مردوں سے زیادہ گدگدی ہوتی ہے: مگر کیوں؟؟تحقیق نے حیرت انگیز وجہ بیان کر دی

لاہور(ویب ڈیسک) گدگدی ایک ایسی چیز ہے جس کے سامنے عموماً سنجیدہ سے سنجیدہ افراد بھی ہتھیار ڈال دیتے ہیں۔ اب ایک تحقیق میں انکشاف ہوا ہے کہ جب بات پیروں میں گدگدی کرنے کی آتی ہے تو خواتین اس میں مردوں سے زیادہ حساس ہوتی ہیں۔ نیوزی لینڈ کی یونیورسٹی آف آکلیند

کے محققین نے ٹِکل فوٹ نامی ایک ایسی ڈیوائس بنائی ہے جس سے مردوں اور عورتوں کے پیروں میں کی جانے والی گُدگدی سے ہونے والے اثرات کا تجزیہ کیا گیا۔ تحقیق میں سامنے آنے والی معلومات سے پتہ لگا کہ خواتین کے تلوے کا درمیانی حصہ زیادہ گدگدی کے لیے حساس ہوتا ہے جبکہ مردوں کا پنجوں کا حصہ زیادہ حساس ہوتا ہے۔ گزشتہ تحقیق میں بتایا گیا کہ گدگدی کرنا تناؤ سے راحت بخش سکتا ہے لیکن اس متعلق کم ہی معلومات تھی کہ اس کے مردوں اور عورتوں پر اثرات مختلف ہوتے ہیں۔ محققین نے پیروں میں گدگدی کے لیے ایک بیٹری سے چلنے والی ڈیوائس بنائی جس میں چھوٹے چھوٹے برش لگے ہیں تاکہ پیر کے مختلف حصوں تک پہنچا جا سکے۔ اے سی ایم ٹرانزیکشن آن کمپیوٹر-ہیومن انٹرایکشن میں شائع ہونے والی ایک تحقیق میں محققین، جن کی سربراہی ڈان سامیتھا ایلوِٹِگالا نے کی، نے کہا کہ پہلے محققین نے ایک ایکٹوایٹر بنایا جو پیر کے تلوے میں گدگدی کر سکے۔ انہوں نے کہا کہ اس کے بعد محققین نے دو مطالعے کیے تاکہ یہ دیکھا جا سکے کہ پیر میں سب سے زیادہ گدگدی محسوس ہونے والی جگہیں کون سی ہیں۔

Leave a Reply

Your email address will not be published.