موبائل صارفین کے لیے پریشان کن خبر، کال اور ڈیٹا پیکجز کی قیمتوں میں ایک بار پھر بڑا اضافہ

اسلام آباد(ویب ڈیسک) سیلولر کمپنیوں نے اپنے کال اور ڈیٹا پیکجز کی قیمتوں میں ایک بار پھر اضافہ کر دیا۔ نیوز ویب سائٹ ’پروپاکستانی‘ کے مطابق جاز، زونگ اور ٹیلی نار کی طرف سے جنوری 2022ءمیں پیش کیے گئے منی بجٹ کے بعد دوسری بار اپنی سروسز کی قیمتیں بڑھائی گئی ہیں۔ دکانداروں اور ریٹیلرز کے مطابق سیلولر کمپنیوں نے

اضافے کے بعد نئے چارجز کی کٹوتی شروع بھی کر دی ہے۔ دکانداروں اور ریٹیلرز نے بتایا ہے کہ کمپنیوں نے سپر لوڈ 50روپے سے 100روپے کر دیا ہے۔ مختلف ڈیٹا پیکجز کی قیمت میں 10سے 25روپے تک اضافہ کیا گیا ہے۔ ماہانہ کال پیکجز کی قیمت میں 40روپے سے 100روپے تک اضافہ کیا گیا ہے جبکہ ہفتہ وار ’آل اِن ون‘ پیکجز کی قیمت میں 10سے 20روپے اضافہ کیا گیا ہے۔ واضح رہے کہ منی بجٹ میں تحریک انصاف کی حکومت نے سیلولر کمپنیوں پر عائد ’وِد ہولڈنگ ٹیکس‘ میں 10سے 15فیصد اضافہ کر دیا تھا، جس کے سبب کمپنیوں کی طرف سے کال اور ڈیٹا پیکجز کی قیمت میں اضافہ کیا جا رہا ہے۔ سیلولر کمپنیوں نے اپنے کال اور ڈیٹا پیکجز کی قیمتوں میں ایک بار پھر اضافہ کر دیا۔ نیوز ویب سائٹ ’پروپاکستانی‘ کے مطابق جاز، زونگ اور ٹیلی نار کی طرف سے جنوری 2022ءمیں پیش کیے گئے منی بجٹ کے بعد دوسری بار اپنی سروسز کی قیمتیں بڑھائی گئی ہیں۔ دکانداروں اور ریٹیلرز کے مطابق سیلولر کمپنیوں نے اضافے کے بعد نئے چارجز کی کٹوتی شروع بھی کر دی ہے۔ دکانداروں اور ریٹیلرز نے بتایا ہے کہ کمپنیوں نے سپر لوڈ 50روپے سے 100روپے کر دیا ہے۔ مختلف ڈیٹا پیکجز کی قیمت میں 10سے 25روپے تک اضافہ کیا گیا ہے۔ ماہانہ کال پیکجز کی قیمت میں 40روپے سے 100روپے تک اضافہ کیا گیا ہے جبکہ ہفتہ وار ’آل اِن ون‘ پیکجز کی قیمت میں 10سے 20روپے اضافہ کیا گیا ہے۔ واضح رہے کہ منی بجٹ میں تحریک انصاف کی حکومت نے سیلولر کمپنیوں پر عائد ’وِد ہولڈنگ ٹیکس‘ میں 10سے 15فیصد اضافہ کر دیا تھا، جس کے سبب کمپنیوں کی طرف سے کال اور ڈیٹا پیکجز کی قیمت میں اضافہ کیا جا رہا ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published.