الیکشن انوکھا اقدام!!!! پی ٹی آئی رکن اسمبلی کو مردہ قرار دے دیا، نام ووٹرلسٹ سے خارج

اسلام آباد: (ویب ڈیسک) الیکشن کمیشن نے پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کے زندہ رکن صوبائی اسمبلی کو مردہ قرار دے دیا۔ الیکشن کمیشن نے رکن سندھ اسمبلی ریاض حیدرکا نام ووٹرلسٹ سے ان کے’انتقال’ پر خارج کردیا۔ جیو نیوز سے گفتگو کرتے ہوئے رکن صوبائی اسمبلی ریاض حیدرکا کہنا تھا کہ الیکشن کمیشن نے مردہ قرار دے کر میرا نام انتخابی فہرست سےنکال دیا

ایک ووٹر نے ووٹ ضلع وسطی سے ضلع جنوبی منتقل کرنےکی شکایت کی تو میں نے اپنی تسلی کے لیے ووٹرلسٹ پر اپنا نام چیک کرنےکے لیے میسج کیا تو مجھے پیغام آیا کہ میری فوتگی کی تصدیق ہونے پر میرا نام فہرست سے خارج کردیا گیا ہے۔ ریاض حیدرکا کہنا ہےکہ منتخب نمائندے کے ساتھ الیکشن کمیشن کا یہ سلوک ہے تو عام شخص کے ساتھ کیا سلوک ہوگا۔ دوسری جانب اسلام آباد میں صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے چیف الیکشن کمشنر کا کہنا تھا کہ الیکشن کمیشن اپنے فیصلے بلا خوف کرتا ہے اور کرتا رہے گا، فیصلوں سے کوئی ناراض یا راضی ہوتا ہے یہ ان کا مسئلہ ہے۔ سکندر سلطان راجہ نے کہا کہ سب ہمارے دوست ہیں الیکشن کمیشن آئین اور قانون کے مطابق فیصلے کرتا ہے۔ ایک سوال کے جواب میں سکندر سلطان راجہ نے کہا کہ الیکشن کمیشن انتخابات کے لیے ہمیشہ تیارہے، تاہم نئے انتخابات کا فیصلہ حکومت نے کرنا ہے، الیکشن کمیشن کا کام صاف شفاف اور غیر جانبدار انتخابات کرانا ہے۔ چیف الیکشن کمشنر کا کہنا تھا کہ حلقہ بندیوں پر تیزی سے کام جاری ہے، مردم شماری سے متعلق الیکشن کمیشن کا مؤقف واضح تھا کہ مردم شماری سرکاری طور پر شائع ہونے سے قبل حلقہ بندیاں نہیں کی جا سکتیں۔ انہوں نے کہا کہ مئی 2021 میں 2017 کی مردم شماری کے نتائج شائع ہوئے، نئی حلقہ بندیوں پر کام مردم شماری کے نتائج شائع ہونے کے بعد شروع کیا، 2018 کے انتخابات اور حلقہ بندیوں سےمتعلق خصوصی آئینی ترمیم لائی گئی تھی۔ سکندر سلطان راجہ نے کہا کہ حکومت ڈیجیٹل مردم شماری کرانا چاہتی ہے، ڈیجیٹل مردم شماری کے نتائج دسمبر 2022 تک ملے تو بروقت حلقہ بندیاں ہو سکتی ہیں، نتائج تاخیر کا شکار ہوئے تو 2017 کی مردم شماری کی بنیاد پر حلقہ بندیوں پر انتخاب ہوگا۔

Leave a Reply

Your email address will not be published.