’’یہ مینجمنٹ عمران خان کو نہیں آتی‘‘ سلمان شہباز کس کاروباری ڈیل کے لیے ترکی پہنچے تھے؟ تہلکہ خیز دعویٰ

اسلام آباد(نیوز ڈیسک)وزیراعظم شہبازشریف کے دورہ ترکی موقع پر سلیمان شہباز ترکی کیوں گئے؟ شہبازگل نے بڑا دعویٰ کردیا۔اپنے ٹوئٹر پیغام میں شہبازگل نے کہا کہ سننے میں آیا ہے کہ نارتھ سائپرس کی ایک کمپنی سے سلمان شہاز کی بات طے ہوئی۔ پھر ترکی میں سرکاری ڈنر بھی پائے گئے۔آج وہاں پر بننے والے سولر پینل پر

ٹیکس کی چھوٹ دے دی گئی۔انہوں نے مزید کہا کہ واقعی یہ والی مینجمنٹ عمران خان کو نہیں آتی۔دوسری جانب ے کون تھا؟تفصیلات کے مطابق سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر جاری بیان میں شہباز گل نے کہا کہ پاکستان میں تعینات روسی سفیر ڈینئل گنیش کے بیان کے بعد اب کسی کو ابہام نہیں ہونا چاہیے کہ پاکستان میں رجیم چینج آپریشن سازش کے پیچھے کون تھا؟ اسکے تانے بانے کہاں ملتے ہیں؟پی ٹی آئی رہنما نے کہا کہ لڑائی کے بعد کسی ملک پر قبضہ کرنا پرانی حکمت عملی ہے مگر پاکستان میں بکاؤ لوگوں کو خرید کر حکومت کی تبدیلی سے ملک کو عملی طور پر غلام بنایاگیا۔واضح رہے کہ گذشتہ روز نجی نیوز چینل کو انٹرویو میں روسی سفیر ڈینئل گنیش نے کہا تھا کہ دورہ روس عمران خان حکومت کے گرنے کی وجہ بنی، عمران خان کا ماسکو میں ہونا اور یوکرین پر حملہ ایک اتفاق ہے، اگر عمران خان کو پتا ہوتا تو اس دن کبھی نہ آتے، عمران خان بنیادی طور پر ایک ایماندار آدمی ہے اور وہ اپنے لوگوں کی بہتری چاہتے ہیں۔روس اور یوکرین جنگ کے حوالے سے روسی سفیر نے بتایا کہ روس کو نیٹو کی نقل و حرکت پر تشویش تھی، ہمارے بارڈر پر نیٹو کی نقل و حرکت یوکرین جنگ کی وجہ بنی۔دو روز قبل کراچی میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے روسی قونصل جنرل آندرے فیڈروف نے کہا تھا کہ پاکستان حکومت رابطہ کرے گی تو ہم سستا تیل فراہم کریں گے، سابق وزیر اعظم کے دورہ روس میں تیل کی تجارت پر بات ہوئی تھی۔

واضح رہے کہ وزیراعظم شہبازشریف کے دورہ ترکی کے موقع پر پاکستان کی عدالتوں سے اشتہاری مفرور ملزم سلیمان نے اپنی اہلیہ کے ہمراہ ترک صدر رجب طیب ایردوان کی جانب سے دیے گئے عشایئے میں شرکت کی تھی۔سلمان شہباز پاکستان اور ترک سربراہان مملکت کی میز پر بیٹھے نظر آئے ، جس کے بعد سوالات اٹھ گئے ہین کہ سلیمان شہباز اور ان کی اہلیہ کس حیثیت میں سرکاری دوروں میں شامل ہیں۔اس سے قبل سلیمان شہباز دورہ سعودی عرب میں بھی سرکاری وفد میں شامل تھے، شہباز شریف کی سعودی ولی عہد محمد بن سلمان سے ملاقات کے دوران بیٹے اور بھتیجے کی موجودگی پرسوشل میڈیا صارفین نے اظہار برہمی کیا تھا اور سوال اٹھایا تھا کہ حسین نواز اور سلیمان نوازسرکاری وفد کا حصے کیسے بنے ؟؟ شتہاری ملزم نے کس حیثیت سے ولی عہد محمد بن سلمان سے وفد کیساتھ ملاقات کی۔

Leave a Reply

Your email address will not be published.