……حفیظ شیخ کو دراصل کیا چیز لے ڈوبی ؟ جانیے

اسلام آباد (ویب ڈیسک) ملک میں بڑھتی مہنگائی وفاقی وزیر خزانہ عبدالحفیظ شیخ کو لے ڈوبی ‘ حکومت نے عبدالحفیظ شیخ کووزیر خزانہ کے عہدے سے ہٹاکر حماد اظہر کو وزارت خزانہ کا اضافی قلمدان دے دیا۔تحریک انصاف کے سینئررہنما سینیٹر شبلی فراز نے عبدالحفیظ شیخ کو وزیر خزانہ کے عہدے سے ہٹانے کی تصدیق کرتے ہوئے

کہاہے کہ مہنگائی کی وجہ سے عمران خان ناخوش تھے جس کی وجہ سے حفیظ شیخ کو عہدے سے ہٹایاگیاہے۔وزیراعظم نے نئی معاشی ٹیم بنانے کا فیصلہ کیاہے ‘حقائق مدنظر رکھ کر فیصلے کئے جاتے ہیں ‘کابینہ میں تبدیلیوں کا مقصد غریب عوام کو ریلیف فراہم کرنا ہے‘ حماد اظہر وزیراعظم کے وژن کو آگے لیکر چلیں گے‘وزیر خزانہ کا قلمدان حماد اظہر کو دیا گیا ہے۔اب حکومت ایک نئے ولولے کے ساتھ کام کرے گی ‘تمام تر توجہ مہنگائی کو کنٹرول کرنے پر ہوگی‘کابینہ میں تبدیلیوں کے حوالے سے آج فیصلہ ہو جائے گا‘جو بھی تبدیلیاں ہوگی عوام کے سامنے لائی جائیں گی، مجھے کون سی وزارت دی جائے گی اس کا ابھی مجھے علم نہیں۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے پیر کو مختلف ٹی وی چینلز کے ساتھ گفتگو کرتے ہوئے کیا۔ ذرائع نے بتایا ہےکہ معاشی پالیسیوں اور اسٹیٹ بینک کی خود مختاری کے حوالے سے کابینہ میں تحفظات پائے جاتے ہیں۔ بڑھتی ہوئی مہنگائی بھی ایک اہم ایشو ہے جس پر وزیر اعظم اور کئی وزراء کے تحفظات ہیں۔ذرائع کے مطابق عمران خان کی زیر صدارت پیر کو ایک اہم اجلاس ہوا جس میں وفاقی کابینہ میں تبدیلیوں پر مشاورت کی گئی ۔ ذرائع کا کہنا ہےکہ وفاقی کابینہ میں اتحادی جماعتوں ایم کیو ایم پاکستان اور بلوچستان عوامی پارٹی (بی اے پی) کو بھی نمائندگی دینے پر مشاورت کی گئی ۔ ذرائع کے مطابق اجلاس میں عالمی سطح پر ملکی بیانیہ مضبوط بنانے کی تجاویز پر غور کیا گیا۔وزیراعظم نے بنی گالہ میں وزراء سے طویل نشست میںوزارتوں اور ڈویژنز کی کارکردگی پرمشاورت کی‘وزیراعظم کو ٹیکنوکریٹ کی بجائے منتخب لوگوں کو وفاقی کابینہ میں شامل کرنے کے مشورے دیے گئے ۔

Leave a Reply

Your email address will not be published.