ایک ائیر ہوسٹس نے حیران کن باتیں بتا دیں

لندن (ویب ڈیسک) ہوائی جہاز میں سفر کے دوران گاہے مسافروں میں تلخی بھی ہو جاتی ہے۔ اس تلخی کی ایک بڑی وجہ ’آرم ریسٹ‘ کا استعمال ہے۔ اس حوالے سے اب ایک ایئرہوسٹس نے حیران کن بات کہہ دی ہے۔ ڈیلی سٹار کے مطابق کیٹ کیملانی نامی اس ایئرہوسٹس نے اپنے ٹک ٹاک اکاﺅنٹ

پرایک ویڈیومیں بتایاہےکہ جومسافردرمیان والیسیٹ پربیٹھاہوتا ہے، اپنے دونوں اطراف کی آرم ریسٹ اسے استعمال کرنی چاہئیں، جبکہ درمیانی راستے اور کھڑکی کے ساتھ والی سیٹوں پر بیٹھے مسافروں کو ایک ایک آرم ریسٹ استعمال کرنی چاہیے۔اگر مسافر آرم ریسٹ کے معاملے پر ایک دوسرے سے تعاون نہ کریں تو ان میں تلخی ہو نے کا امکان بہت زیادہ ہوتا ہے۔کیٹ کیملانی نے بتایا کہ ”ایک مسئلہ کھڑکی کا پردہ بند کرنے کا ہوتا ہے۔ کھڑکی بند کرنے یا کھلی رکھنے کا اختیار صرف اس مسافر کے پاس ہوتا ہے جو کھڑکی کے ساتھ والی سیٹ پر بیٹھا ہوتا ہے، بھلے ہی دوسرے مسافر اس کے فیصلے پر خوش ہوں یا ناراض۔ اس کے علاوہ سیٹ کو پیچھے جھکانے کے معاملے پر بھی مسافروں میں تلخی ہوتی ہے۔ میرے خیال میں ہر مسافر کو حق حاصل ہے کہ وہ اپنی سیٹ کو جتنا پیچھے کی طرف چاہے جھکا لے۔ اس پر اس کے پیچھے بیٹھے مسافر کو اعتراض نہیں کرنا چاہیے۔ فضائی کمپنیوں نے اپنے طیاروں کی سیٹوں میں یہ فیچر اسی مقصد کے لیے رکھا ہے کہ مسافر سیٹ کو اپنی مرضی کے مطابق پیچھے کرکے پرسکون طریقے سے سفر کر سکیں۔“کمنٹس میں صارفین کیٹ کیملانی کی ان باتوں سے شدید اختلاف بھی کر رہے ہیں۔ ان کا کہنا ہے کہ تمام مسافروں کو ایک دوسرے کے آرام اور خوشی کا خیال رکھنا چاہیے۔ ایسا نہیں ہو سکتا کہ ایک مسافر کو کھڑکی کے پردے کا اختیار دے دیا جائے اور باقی مسافر اس پر کڑھتے رہیں۔

Leave a Reply

Your email address will not be published.