ملالہ یوسفزئی کا ایک اور بیان

لندن (ویب ڈیسک) برطانوی فیشن میگزینVogue نے اپنے جولائی کے شمارے کے سرورق کیلئے نوبل انعام یافتہ پاکستانی طالبہ ملالہ یوسف زئی کی تصویر کا انتخاب کیا ہے۔ 23 سالہ ملالہ نے گزشتہ سال آکسفورڈ یونیورسٹی سے فلسفہ، سیاست اور اقتصادیات میں ڈگری حاصل کی ہے۔ میگزین کو انٹرویو دیتے ہوئے یونیورسٹی کے حوالے سے اپنے تاثرات

بیان کرتے ہوئے انھوں نے کہا کہ اپنے دوستوں کے مک ڈونلڈ یا پوکر کھیلنے کیلئے یا کسی تقریب میں گفتگو کیلئے جاتے ہوئے مجھے خوشگوار حیرت ہوتی تھی، میں نے یونیورسٹی کی زندگی کے ہر لمحہ کا لطف اٹھایا ہے کیونکہ اس سے قبل میں نے یہ سب کچھ نہیں دیکھا تھا۔ اس نے بتایا کہ میری کبھی بھی اپنے عمر کے لوگوں کے ساتھ نشستیں نہیں رہیں، کیونکہ اپنےساتھ ہونیوالے واقعہ کے بعد صحتیاب ہونے کے بعد میں پوری دنیا کا سفر کرتی رہی اور میں نے ایک کتاب لکھی اور ایک ڈاکومنٹری میں کام کیا، اس طرح دن گزرتے گئے، یونیورسٹی میں مجھے خود اپنے لئے کچھ وقت ملا۔ اس نے کہا کہ برمنگھم میں، جہاں پاکستان سے آنے کے بعد انھوں نے تعلیم حاصل کی، انھیں ان کی شہرت سے نقصان پہنچا، لوگ مجھ سے طرح طرح کے سوال کرتے تھے، لوگ پوچھتے تھے کہ ایما واٹسن یا انجیلیناجولی یا اوباما سے ملنے سے آپ کو کیسا محسوس ہوا۔ انھوں نے کہا کہ میری سمجھ میں نہیں آتا تھا کہ انھیں کیا جواب دوں۔ فیشن میگزین میں ملالہ کی جو تصویر سرورق کیلئے منتخب کی گئی ہے، اس میں وہ سرپر سرخ رنگ کا اسکارف باندھے ہوئے ہیں۔ انھوں نے ثقافتی اعتبار سے لبا س کی اہمیت پر بھی بات کی ہے۔ انھوں نے اسکارف کو پشتونوں کی ثقافتی علامت قرار دیا اور کہا کہ اس سے ظاہر ہوتا ہے کہ میرا تعلق کہاں سے ہے۔ انھوں نے کہا کہ مسلمان لڑکیاں یا پشتون یا پاکستانی لڑکیاں جب اپنے روایتی لباس پہنتی ہیں تو انھیں بے زبان یا مظلوم تصور کیا جاتا ہے، میں ہر ایک کو یہ بتا دینا چاہتی ہوں کہ آپ کی آواز آپ کی ثقافت میں ہے اور اپنی ثقافت میں ہی آپ کو برابری مل سکتی ہے۔ برطانوی فیشن میگزین کی ایڈیٹر ایڈورڈ اینی فل نے کہا کہ جب لوگوں کو پتہ چلا کہ میں نے ملالہ کی تصویر سرورق پر چھاپنے کا فیصلہ کیا ہے۔ انھوں نے کہا کہ میں ملالہ کی عزت و احترام کرتا ہوں، ملالہ نے 23 سال کی عمر میں بہت سی زندگیاں گزاری ہیں، وہ لڑکیوں کی تعلیم کی کمپینر، مصنف، بیٹی، بہن اور ایک قاتلانہ حملے میں بچ جانے والی لڑکی ہے۔ اس کے دوست ایپل کمپنی کے سی ای او ٹم کوک نے اس کی تعریف نارتھ اسٹار کہہ کر کی ہے، جس نے ہمیشہ مجھے مرعوب کیا لیکن اس سارے فسانے کی پشت پر کون خاتون ہیں۔ اپریل میں برطانوی فیشن میگزین نے 3 دن ملالہ کو سمجھنے پر لگا دیئے، فوٹوگرافر نک نائٹ نے ان کی تصاویر بنائیں، اس کے ساتھ ہی انھوں نے ٹم کے ساتھ ان کی ویڈیو بھی بنائی اور انھوں نے صحافی سیرین کال کے ساتھ بات چیت بھی کی۔

Leave a Reply

Your email address will not be published.