غصے میں آنے سے پہلے اب یہ خبر ضرور پڑھ لیں

اسلام آباد(ویب ڈیسک)بچوں کے ساتھ غلط سلوک کیا تو سزا ہوگی،اگر بزرگ والدین کو گھروں سے نکالا تو بچے قید میں جائیں گے،بچوں پر بدسلوکی پر والدین کو بھی قید میں جانا ہو گا۔جرم ناقابل ضمانت اور ثابت ہونے پرتین سال تک سزا ہو گی، بزرگ شہریوں کو عوامی مقامات پر داخلہ

فری،علاج معالجے کی سہولیات،رہائش کیلئے اولڈ ہوم کی تعمیر کی جائے گی، سینٹ انسانی حقوق کمیٹی نے گھریلو تشدد کی ممانعت اور سینئر سٹیزن بلز پاس کرلیا۔سینئر سٹیزن بل 2021کے مطابق بزرگ شہریوں کیلئے اسپتالوں میں الگ کاونٹر بنیں گےعوامی مقامات میوزیم پارکس میں مفت داخلہ ہوگا،ساٹھ سال سے زائد بزرگوں کیلئے سینئرسٹیزن کارڈ بنیں گے، جن پر ریل اور ہوائی سفر میں بیس فیصد کرایہ معاف ہوگا،بزرگ شہریوں کے تحفظ کی کونسل بنے گی،حکومت فنڈ مختص کرے گی خلاف ورزی کرنے والے اداروں پر پچاس ہزار جرمانہ ہوگا۔پرائیویٹ اسپتال کی غفلت سے جان کھو دینے پر متعلقہ اسپتال پر 10لاکھ روپے جرمانہ ہوگا،وفاقی وزیر انسانی حقوق سینئر سٹیزن کونسل کے چیئرپرسن ہونگے۔ممبران میں سول سوسائٹی کا نمائندہ،چیف کمشنر اسلام آباد،فنانس ڈویڑن کا ایک نمائندہ،قومی صحت ڈویڑن کا نمائندہ،پاکستان بیت المال کا ایک نمائندہ،وزارت انسانی حقوق کی طرف سے نامزد کردہ سینئر سٹیزن ،ایک قومی اسمبلی کا رکن،ایک سینیٹر،ایک وزارت پاورٹی ایلیویشن کا نمائندہ اور سیکرٹری وزارت انسانی حقوق شامل ہونگے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published.