ایک اینکر نے عمران خان کے موقف کی حمایت میں بھونڈی دلیل پیش کردی

لاہور(ویب ڈیسک) وزیراعظم عمران خان نے گزشتہ دنوں ایک امریکی ٹی وی چینل کو انٹرویو دیتے ہوئے بیان دیا کہ خواتین اگر کم لباس پہنیں گی تو اس کا مردوں پر لازمی اثر ہو گا۔ اس بیان پر دو آراءپائی جا رہی ہیں۔ کچھ لوگ، بالخصوص حقوق نسواں کے کارکن اس بیان کی مخالفت کر رہے ہیں

جبکہ تحریک انصاف کے حامی اس بیان کے دفاع میں دلیلیں تراش رہے ہیں۔ گزشتہ دنوں ایک آدمی جسے نجی ٹی وی چینل کا رپورٹر قراردیاجارہاہے، نے اس بیان کے حق میں ایسی دلیل دے ڈالی کہ ویڈیو منظر عام پر آئی تو لوگ سر پیٹ کر رہ گئے۔ اس ویڈیو میں یہ آدمی خواتین کو ایک ’ٹافی‘ سے تشبیہ دے رہا ہوتا ہے۔یہ آدمی دو ٹافیاں لیتا ہے۔ ان میں سے ایک کا ریپر اتار دیتا ہے اور کہتا ہے کہ” اب میں ان دونوں ٹافیوں کو یہاں سڑک پر پھینک دیتا ہوں، گھنٹہ دو گھنٹے بعد اس میں سے کون سی ٹافی کو آپ کھا سکیں گے۔ جو ٹافی ریپر اتار کر رکھی گئی ہے اس پر وائرس، بیکٹیریا وغیرہ ’دھاوا بول دیں گے اور لوگ اسے نہیں کھائیں گے جبکہ جو ٹافی ریپر میں ہے اسے ہر کوئی کھا لے گا۔ اس طرح وزیراعظم عمران خان نے بھی خواتین اور ان کے لباس کے متعلق بات کی ہے کہ خواتین کو پورا لباس پہننا چاہیے۔“اس آدمی نے جس بھونڈے انداز میں خواتین کو ٹافی سے تشبیہ دی ہے، اس پر سوشل میڈیا صارفین کی طرف سے شدید ردعمل آ رہا ہے۔ عنایا خان نامی ایک صارف نے لکھا ہے کہ ”اس آدمی کے ساتھ روزمرہ زندگی میں جن خواتین کو واسطہ پڑتا ہے، خدا انہیں اس آدمی سے محفوظ رکھے۔“ ظاہر ہے ایک عورت کو ٹافی سے تشبیہہ دینا ایک چھوٹے ذہن کا منہ بولتا ثبوت ہے جبکہ اس کی حمایت میں اس سے بہت بہتر مثالیں پیش کی جاسکتی ہیں ۔

Leave a Reply

Your email address will not be published.