جسٹس قاضی فائز عیسیٰ کے خلاف بیان دو اور گرانٹ حاصل کر لو ۔۔۔۔۔

لاہور (ویب ڈیسک) لاہور ہائیکورٹ بار کے سیکرٹری خواجہ محسن عباس نے الزام عائد کیا ہے کہ بار کی گرانٹ کو جسٹس قاضی فائز عیسیٰ کے خلاف بیان اور قرار داد سے مشروط کردیا گیا ہے۔نجی ٹی وی چینل سے گفتگو کرتے ہوئے خواجہ محسن عباس نے کہا کہ وزارتِ قانون کی جانب سے لاہور ہائیکورٹ بار

کو گرانٹ جاری کرنے کیلئے یہ شرط رکھی گئی کہ سپریم کورٹ کے جج جسٹس قاضی فائز عیسیٰ کے خلاف بیان دیا جائے اور قرار داد منظور کی جائے۔ جب بار کونسل انتظامیہ نے حکومتی شرط ماننے سے انکار کردیا تو وزارت قانون نے کروڑوں روپے کی گرانٹ جاری کرنے کی بجائے صرف 40 لاکھ روپے کا چیک بنادیا گیا۔دوسری جانب وفاقی وزیر قانون فروغ نسیم نے الزامات کی تردید کرتے ہوئے کہا ہے کہ بار کونسلز کو سیاسی امتیاز کے بغیر گرانٹس جاری کی جاتی ہیں۔

Leave a Reply

Your email address will not be published.