ریحام خان ہار گئیں ۔۔۔زلفیٰ بخاری جیت گئے ،

لندن (ویب ڈیسک) وزیراعظم عمران خان کے سابق معاون خصوصی اور منسٹر برائے اوورسیز پاکستان زلفی بخاری نے براڈ کاسٹر اور عمران خان کی سابقہ اہلیہ ریحام خان کے خلاف ہتک عزت کے مقدمہ کا پہلا رائونڈ لندن ہائی کورٹ میں جیت لیا۔ کیس کی ابتدائی سماعت مسز جسٹس کیرن اسٹین نے کی

اور زلفی بخاری کی طرف سے ریحام خان کے یوٹیوب، ٹیوب براڈ کاسٹ اور ٹوئٹس کے ذریعے لگائے گئے الزامات پر کی گئی شکایات کا جائزہ لیا۔ یہ الزامات روز ویلٹ ہوٹل کی فروخت کے حوالے سے لگائے گئے تھے۔ مسز جسٹس کیرن اسٹین نے پبلی کیشن کے حوالے سے ریحام خان کی تشخیص کو نہیں مانا، البتہ زلفی بخاری کی گزارشات کو تسلیم کیا۔ ہتک عزت کے اس مقدمہ کا آغاز 6 دسمبر 2019ء کو اس وقت ہوا جب ریحام خان نے یو ٹیوب براڈ کاسٹ میں الزام لگایا کہ پی آئی اے کی امریکہ میں ملکیت ہوٹل روز ویلٹ کی فروخت میں زلفی بخاری کا مفاد ہے اور قومی اثاثوں کو زلفی بخاری جیسے لوگوں کو فائزہ پہنچانے کے لئے فروخت کیا جارہا ہے جوکہ ایک واردات ہے۔ زلفی بخاری کے وکیل بیرسٹر کلیئر اوور مین نے کہا کہ ریحام خان نے زلفی بخاری پر بدعنوان اور بے ایمان ہونے کے الزامات عائد کئے، اس لئے ان پر انتہائی توہین آمیز والی ’’چیز لیول ون‘‘ عائد کی جائے جبکہ ریحام خان نے یہ موقف اپنایا کہ زلفی بخاری کی حیثیت کو کوئی نقصان نہیں پہنچا اور انہوں نے ایسا عوامی مفاد میں کیا

Leave a Reply

Your email address will not be published.