دلیپ کمار نے ہالی وڈ کی فلموں میں کیا کہہ کر کام کرنے سے انکار کیا تھا ؟

لاہور (ویب ڈیسک) گزشتہ دنوں انتقال کر جانے والے دلیپ کمار اپنے فن کا لوہا منوانے کیلئے ہالی ووڈ میں کام کرنے کے قائل نہیں تھے۔غیر ملکی میڈیا رپورٹس میں کہا جارہا ہے کہ دلیپ کمار کو 1962 میں مشہورِ زمانہ فلم ’لارنس آف عریبیہ‘ کا مرکزی کردار نبھانے کی پیشکش کی گئی تھی۔

دلیپ کمار نے اس فلم میں کام کرنے سے انکار کردیا۔ اداکار کو یہ آفر ڈیوڈ لین کی جانب سے کی گئی تھی جو فلم ڈائریکٹر تھے۔فلم پہلی ورلڈ وار کے دوران عرب علاقوں میں لارنس کی سرگرمیوں کا احاطہ کرتی ہے، جس میں معرکہ عقبہ اور دمشق پر حملوں اور عرب قومی شوریٰ میں لارنس کے کردار کو نمایاں کیا گیا ہے۔فلم 35 ویں اکیڈمی ایوارڈز میں 10 اعزازات کے لیے نامزد ہوئی جس میں سے 7 جیتنے میں کامیاب ہوئی۔ جن میں بہترین فلم، بہترین ہدایت کار، بہترین عکس بندی، بہترین صوتی اثرات، بہترین اداکار اور بہترین معاون اداکار کے اعزازات بھی شامل تھے۔دلچسپ بات یہ ہے کہ فلم کو دونوں مرکزی کردار یعنی پیٹر او ٹول بہترین اداکار اور عمر شریف بہترین معاون اداکار کے آسکر اعزاز نہ جیت پائے۔ اس کے علاوہ فلم نے چار بافٹا ایوارڈز اور پانچ گولڈن گلوب ایوارڈز بھی جیتے۔یہ کامیاب فلم دلیپ کمار کی ہالی ووڈ میں پہلی فلم ثابت ہوتی لیکن انہوں نے یہ کہتے ہوئے اس سے انکار کردیا کہ انہیں اپنی صلاحیت ثابت کرنے کے لیے بیرون ملک فلموں میں اداکاری کرنے کی ضرورت نہیں ہے۔سائرہ بانو اور دلیپ کمار نے ایک انٹرویو میں تصدیق کی تھی کہ انہیں ہالی ووڈ سے آفر ہوئی تھی لیکن انہیں ہالی ووڈ میں نام بنانے کا شوق ہے اور نہ خواہش۔

Leave a Reply

Your email address will not be published.