خطے کی بدلتی صورتحال پر سب سے زیادہ پریشان کون ہے ؟

کراچی(ویب ڈیسک) نجی ٹی وی چینل کے پروگرام میں میزبان شہزاد اقبال نے کہا ہے کہ افغانستان سے امریکا کے انخلا کے بعد خطے کی صورتحال تیزی سے تبدیل ہو رہی ہے اور اس میں سب سے زیادہ پریشانی بھارت کو ہے۔ اس حوالے سے سابق سفیر عبدالباسط نے کہا کہ بھارت اس وقت

صورتحال پر قابو پانے کی کوشش کر رہا ہے تہران اور ماسکو سے رابطے میں ہے اور ان کے ذریعے وہ چاہتے ہیں کہ تالیبان سے مذاکرات طے پا جائیں۔میزبان شہزاد اقبال نے کہا کہ افغانستان سے امریکا کے انخلا کے بعد خطے کی صورتحال تیزی سے تبدیل ہو رہی ہے اور اس میں سب سے زیادہ پریشانی بھارت کو ہے کیونکہ انہیں اپنی افغان پالیسی ناکام ہوتی نظر آرہی ہے۔ ایک طرف وہ تالیبان سے مذاکرات کی کوشش کر رہا ہے دوسری طرف انکے کے خلاف افغان حکومت کو ہتھیار بھی فراہم کر رہا ہے۔ ہندوستان ٹائمز کی رپورٹ کے مطابق بھارتی حکومت نے پہلی بار لڑاکا رہنماؤں کے سات بات چیت کی ہے خیال کیا جارہا ہے بھارتی وزیر خارجہ کا حالیہ دورہ روس اور ایران اسی سلسلے میں تھا کہ یہ دونوں ممالک بھارت کے تالیبان سے معاملات بہتر کرنے میں مدد فراہم کریں گے۔ سابق سفیر عبدالباسط نے کہا کہ بھارت اس وقت صورتحال پر قابو پانے کی کوشش کر رہا ہے تہران اور ماسکو سے رابطے میں ہے اور ان کے ذریعے وہ چاہتے ہیں کہ تالیبان سے مذاکرات طے پاجائیں تاہم وہ بھی ایک حد تک بھارت کے ساتھ انگیج کرنا چاہیں گے شاید تالیبان بھی پاکستان پر تھوڑا دباؤ رکھنا چاہتے ہیں لیکن ابھی کوئی بریک تھرو نہیں ہوا ہے اس لئے بھارت نے یہ فیصلہ کیا ہے کہ فی الحال سب بند کر دیا جائے لیکن ان کا سفارتخانہ فی الحال کھلا ہے۔تالیبان بہت احتیاط سے آگے بڑھ رہے ہیں وہ کوئی ایسا کام نہیں کریں گے جس سے انہیں مسائل ہوں ۔

Leave a Reply

Your email address will not be published.