نیوزی لینڈ کرکٹ ٹیم کب پاکستان آرہی ہے ؟

کراچی(ویب ڈیسک) نیوزی لینڈ کرکٹ ٹیم18سال بعدآئندہ ماہ پاکستان کا دورہ کرے گی۔ ون ڈے انٹرنیشنل پنڈی اسٹیڈیم اور ٹی ٹوئنٹی انٹرنیشنل قذافی اسٹیڈیم لاہور میں ہوں گے۔ پاکستان کرکٹ بورڈ نے جمعرات کو نیو زی لینڈ کے دورہ پاکستان کے شیڈول کا اعلان کردیا ہے۔ چیف ایگزیکٹو پی سی بی وسیم خان کے مطابق

نیوزی لینڈ کرکٹ نے ہماری درخواست پر دورے میں دو ٹی ٹوئنٹی انٹرنیشنل میچز کے اضافے پر آمادگی ظاہر کی۔نیوزی لینڈ کرکٹ ٹیم 11ستمبر کو اسلام آباد پہنچے گی۔12تا14 ستمبر کو مہمان ٹیم روم آئسولیشن میں رہے گی اور16ستمبر کو پریکٹس کرے گی17ستمبر کو پنڈی میں انٹرا اسکواڈ میچ کھیلا جائے گا۔ دورے کے دوران کیویز ٹیم آئی سی سی مینز کرکٹ ورلڈکپ سپر لیگ میں شامل تین ون ڈے انٹرنیشنل میچز اورپانچ ٹی ٹوئنٹی انٹرنیشنل میچز کھیلے گی۔ ون ڈے انٹرنیشنل سیریز میں تینوں میچز 17، 19 اور 21 ستمبر کو پنڈی جبکہ پانچوں ٹی ٹوئنٹی انٹرنیشنل میچز قذافی اسٹیڈیم لاہور میں 25ستمبر سے 3 اکتوبر تک کھیلے جائیں گے۔ ون ڈے انٹرنیشنل میچز آئی سی سی مینز کرکٹ ورلڈکپ 2023 میں رسائی کے لیے اہم ہوں گے جبکہ پانچ ٹی ٹوئنٹی انٹرنیشنل میچز قومی کرکٹ ٹیم کے لیے آئی سی سی ورلڈ ٹی ٹوئنٹی رینکنگ میں تیسری پوزیشن حاصل کرنے کا بہترین موقع ثابت ہوں گے۔ آئی سی سی ورلڈ ٹیسٹ چیمپئن شپ کی فاتح ٹیم نیوزی لینڈ ٹیسٹ سیریز کھیلنے آئندہ سال پاکستان آئے گی ۔ نیوزی لینڈ وہ پہلی ٹیم ہوگی جو پاکستان میں موجود شائقین کرکٹ کے لیےترتیب دیئے گئے بمپر کرکٹ سیزن 22-2021 میں شرکت کے لیے پاکستان کاد ورہ کرے گی۔2002 میں کراچی کے ہوٹل کے باہر ہونے والے بم دھماکے کے بعد پاکستان نے اپنی نیوزی لینڈ کے خلاف تمام ہوم سیریز بیرون ملک کھیلیں اور ایک سیریز نیوزی لینڈ میں بھی ہوئی تھی۔ سپر لیگ میں پاکستان 9میچز کے بعد 40 پوائنٹس حاصل کرچکا ہے جبکہ نیوزی لینڈ تین میچز کھیل کر 30 پوائنٹس حاصل کرچکا ہے۔ لیگ میں شامل سات سر فہرست ٹیمیں اور میزبان بھارت کی ٹیم آئی سی سی مینز کرکٹ ورلڈکپ 2023 میں براہ راست رسائی حاصل کرلے گی۔نیوزی لینڈ نے اس سے قبل نومبر 2003 میں آخری مرتبہ پاکستان کا دورہ کیا تھا، جہاں 5 ون ڈے انٹرنیشنل میچز کھیلے گئے تھے۔ 2003 کے بعد پاکستان اب تک تین مرتبہ نیوزی لینڈ کی میزبانی کرچکا ہے تاہم یہ تمام میچز متحدہ عرب امارات میں کھیلے گئے تھے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published.